پاک سرحد کے ساتھ بھارتی جنگی مشقیں

by easy search on 14-10-2015 in

بھارت نے راجستھان میں پاکستانی سرحد کے قریب بڑے پیمانے پر جنگی مشقوں کی تیاری شروع کردی ہے جس کا آغازرواں ماہ میں ہوگا۔بھارت پاکستانی سرحد کے ساتھ کی جانے والی جنگی مشقوں کے دوران جوہری ہتھیاروں کے ساتھ ساتھ بھاری اسلحہ اور ڈرون کا بھی استعمال کرے گا جب کہ ان مشقوں میں 30 ہزار فوجی حصہ لیں گے۔ ان جنگی مشقوں کے دوران پہلی بارسیٹلائٹ اور ڈرون کے ذریعے دوسری جانب کے علاقوں کی لی گئی تصاویر کے مطابق بھارتی فوج مشقیں کرے گی جب کہ پیرا شوٹر کو حریف کی سرحد میں اتارنے کی بھی مشق کی جائے گی۔بھارت نے اس سال پاکستان کیخلاف مختلف جنگی مشقوں کے ذریعے بہت تیاری کی ہے۔بھارت کے پاس تین سٹرائیک کورز ہیں اور یہ مشق 21ویں کور کررہی ہے جو بھارت کی سب سے زیادہ مؤ ثرسٹرائیک کور شمار ہوتی ہے۔کور کے علاوہ جنوبی ہند کے تمام ٹروپس بھی مشق میں شامل ہیں۔ اس میں 30ہزار ٹروپس اور سینکڑوں کے حساب سے T.72,اورT.9 ٹینک حصہ لے رہے ہیں۔اسکے علاوہ آرٹلری گنز، ملٹی پل لانچ راکٹ سسٹم بھی شامل ہیں۔جنگ اور وقت کی کمی کو حقیقت کا روپ دینے کے لئے ان تمام ہتھیاروں کے استعمال کی افیشنسی چیک کرنے کے لئے سٹیلائیٹ ، ڈرونز ، گراؤنڈ اور ائیر بورن راڈار کا استعمال بھی کیا جارہا ہے۔ یہ ایک بہت بڑی جنگی مشق ہے اور اسکی خصوصی بات یہ ہے کہ اس میں ایک فرضی جنگی لائن کھینچ کر اس سے آگے دشمن کا علاقہ تصور کیا گیا ہے اور اس فرضی دشمن کے علاقے میں چھاتہ برادر فوج کے جوان گرائے جائینگے جو دشمن کے پلوں یا دیگرٹارگٹس کو نقصان پہنچائیں گے۔

Leave a Comment