وہ ملک جو کھل کر داعش کے ساتھ کھڑا ہو گیا

by easy search on 15-10-2015 in

داعش کی غیر معمولی شدت پسندی کے خلاف دنیا بھر کے ممالک میں تقریباً یکساں موقف پایا جاتا ہے اور ہر کوئی اس تنظیم سے دور رہنا چاہتا ہے، لیکن روس کا ہمسایہ ملک یوکرین اس کے اس کے ساتھ حیران کن قربت روسی میڈیا کے مطابق یوکرین کے وزیر داخلہ کے مشیر اینٹن گارشینکو کا کہنا ہے کہ داعش کو روس کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے اسے شام میں دخل اندازی پر سخت سزا دینی چاہیے۔ یوکرینی مشیر نے جہاں روس کے خلاف اپنی سخت نفرت کا اظہار کیا وہیں داعش کو ایک جارح ملک کے خلاف کارروائی کی استطاعت رکھنے والا مسیحا بھی قرار دیا۔
روسی مشیر نے اپنے ویب سائٹ پیج پر اپنے فالوورز کو یہ پیغام بھی دیا کہ وہ شام میں کارروائی کرنے والی روسی افواج کے بارے میں زیادہ سے زیادہ معلومات انٹرنیٹ پر شائع کریں تاکہ داعش اور اس کی ساتھی تنظیمیں روسی افواج کے خلاف سخت سے سخت اور کامیاب ترین کارروائی کرتے ہوئے اسے شام میں گھسنے پر سبق جہاں ایک طرف روس صدر بشار الاسد کی حکومت کو جائز اور ان کے خلاف لڑنے والوں کو باغی قرار دیتا ہے، وہیں یوکرین میں یہ موقف پایا جاتا ہے کہ روس ایک آزاد ملک میں حکومت کا تختہ الٹنے کے لئے کارروائی کررہا ہے اور داعش کو چاہئیے کہ اسے اپنے  اصولوں کے مطابق عبرتناک سزا دے۔

Leave a Comment